https://pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js?client=ca-pub-1347972388515897 (adsbygoogle = window.adsbygoogle || []).push({});

انڈین کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی کے خلاف ٹویٹر پر ٹرولنگ کے جاری سلسلے کے دوران، ایک ٹوئیٹر ہینڈل سے ویرات کوہلی اور انوشکا شرما کی دس ماہ کی بیٹی کو انتہائی گالی گلوچ کیا گیا، اس کے علاوہ کوہلی کی 10 ماہ کی بیٹی، وامیکا کو ریپ کی دھمکی بھی دی گئی تھی۔

تاہم اس ٹویٹ کے وائرل ہونے کے فوراً بعد، کئی صارفین نے دعویٰ کیا کہ یہ اکاؤنٹ ایک پاکستانی صارف چلا رہا ہے، کیونکہ پروفائل تصویر پاکستانی کرکٹ ٹیم کی جرسی پہنے خاتون کی تھی۔

https://pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js?client=ca-pub-1347972388515897 (adsbygoogle = window.adsbygoogle || []).push({});

تاہم، انڈین ویب سائیٹ، بوم لائیو، نے ان دعووں کو غلط پایا۔ اس اکاؤنٹ کے ذریعے ماضی کی گئی ٹویٹس کی تحقیقات سے پتہ چلا ہے کہ اسے تیلگو بولنے والا، کوئی انتہا پسند ہندو استعمال کرتا ہے اور اس کا کسی پاکستانی صارف سے کوئی لینا دینا نہیں۔

https://pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js?client=ca-pub-1347972388515897 (adsbygoogle = window.adsbygoogle || []).push({});

اکتوبر میں اکاونٹ کے ریٹویٹ کو دیکھتے ہوئے، یہ معلوم ہوا:

اکاؤنٹ نے تلنگانہ اور حیدرآباد سے متعلق پوسٹس کو ریٹویٹ کیاہے۔ حیدرآباد میں سب سے زیادہ بولی جانے والی زبان، تیلگو میں اس یوزر کے متعدد ریٹویٹ تھے۔

اس کے علاوہ یہ اکاؤنٹ انتہا پسند ہندووں کے مواد کو بھی ریٹویٹ کرتا ہے۔ اس میں بی جے پی کے بارے میں پوسٹس، ہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی کی پوسٹس، اور دائیں بازو کی ہندوستانی ویب سائٹ کی چیف ایڈیٹر نوپور جے شرما کی ایک پوسٹ شامل ہے۔

اس یوزر نے ہندوؤں کی بڑے پیمانے پر عیسائیت میں تبدیلی کے حوالے سے سازشی نظریات بھی پوسٹ کیے ہیں۔جو اس بات کو ثابت کرتے ہیں کہ اس اکاؤنٹ کا تعلق پاکستان سے کسی بھی صورت ممکن نہیں۔

https://pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js?client=ca-pub-1347972388515897 (adsbygoogle = window.adsbygoogle || []).push({});