پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے پارٹی چھوڑنے کی دھمکی دے دی. ذرائع کے مطابق آزاد کشمیر انتخابات میں مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے پارٹی حکمت عملی نظر انداز کرنےپر صدارت سے علحدگی اختیار کرنے کی دھمکی دے دی اور پارٹی کی پالیسیوں کے خلاف جانے پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا ۔

سیاسی ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کے روکنے پر فی الحال شہبازشریف خاموش ہیں۔حمزہ شہباز نے شہباز شریف کو معاملہ نواز شریف کے سامنے اٹھانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے واضح کر دیا ہے کہ مریم مائنس نہیں ہوں گی۔

ذرائع کے مطابق ن لیگ میں دراڑ کے حوالے سے جب پارٹی چئیرمین راجہ ظفر الحق اور سیکرٹری جنرل احسن اقبال،ترجمان مریم اورنگزیب اور عطاء اللہ تارڑ سے رابطہ کیا گیا تو چاروں میں سے کسی نے فون ریسیو نہیں کیا۔

آزادکشمیر الیکشن میں مسلم لیگ ن کی شکست کے معاملے پر شہبازشریف نے وزیراعظم آزاد کشمیر سے دھاندلی کے ٹھوس شواہد مانگے اور کہا کہ ٹھوس شواہد کے بغیراحتجاج اور دھرنے کی طرف جانا بے کار ہوگا۔