ائیر بلیو کا جہاز ،28 جولائی 2010 کو معمول کی فلائیٹ پر کراچی ائیرپورٹ سے اسلام آباد ایئرپورٹ آ رہا تھا۔ لیکن جہاز اسلام آباد ائیرپورٹ سے قریب مارگلہ کی پہاڑیوں سے ٹکرا تباہ ہو گیا اور عملے سمیت152 مسافر جان بحق ہو گئے۔

بلیک بکس کی ریکارڈنگ اور تحقیات سے اس حادثے کی بڑی وجہ کپتان کا نا مناسب رویہ تھا۔ جس نے فرسٹ افیسر اور کنٹرول ٹاور کی وارننگ کے باوجود جہاز کی سمت ٹھیک نہیں کی اور طیارہ پہاڑیوں سے ٹکرا گیا۔

حادثے سے چند منٹ قبل کپتان اور فرسٹ افیسر کے درمیان کیا گفتگو ہوئی سنیے اس کی ریکارڈنگ۔

ائیر بلیو طیارہ حادثہ (بشکریہ دنیا نیوز)